وفا وہ شخص میرے ساتھ بھی نہ کرپایا

وفا وہ شخص میرے ساتھ بھی نہ کرپایا

بچھڑتے وقت ملاقات بھی نہ کرپایا

ستارے توڑ کر لانا تو غیر ممکن

وہ میرے حق میں کوئی بات بھی نہ کرپایا

Wafa Wo Shakhs Mere Sath Bhi Na Kar Paya

Bichertey Waqat Mulaqat Bhi Na Kar Paya

Sitarey Torr Kar Lana To Ghair Mumkin

Wo Mere Haq Mein Koi Bat Bhi Na Kar Paya

وہ بھی کیا لوگ ہیں محسؔن جو وفا کی خاطر

شِدتِ غم میں بھی زندہ ہوں تو حیرت کیسی

کچھ دیے تُند ہواؤں سے بھی لڑ جاتے ہیں

وہ بھی کیا لوگ ہیں محسؔن جو وفا کی خاطر

خود تراشیدہ اُصولوں پہ بھی اَڑ جاتے ہیں

Shidat-e-Ghum Mein Bhi Zinda Hoon To Hairat Kaisi

Kuch Diye Tund Hawaoon Se Bhi Larr Jatey Hein

Wo Bhi Kya Log Hein Mohsin Jo Wafa Ki Khatir

Khud Tarasheeda Asuloon Pe Bhi Arr Jatey Hein

پھر اور بھی تنہا نہ ہو جانا

تمہی میں دیوتاؤں کی کوئی خُو بُو نہ تھی ورنہ

کمی کوئی نہیں تھی میرے اندازِ پرستش میں

یہ سوچ لو، پھر اور بھی تنہا نہ ہو جانا

اُسے چھونے کی خواہش میں، اُسے پانے کی خواہش میں

Tumhi Mein Devtaoon Ki Koi Khu Bu Na Thi Warna

Kami Koi Nahi Thi Mere Andaaz-e-Parastish Mein

Ye Soch Lo, Phir Aur Bhi Tanha Na Ho Jana

Ussey Chooney Ki Khawahish Mein, Ussey Paney Ki Khawahish Mein